وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے فلورملز ایسوسی ایشن کو درپیش مسائل کے حل کے لئے پہلے بھی سنجیدہ اقدامات کئے ہیں اور آئندہ بھی تعاون یقینی بنائے گی ۔ وہ وزیراعلیٰ ہاو¿س پشاور میں فلورملز ایسوسی ایشن کے نمائندہ وفد سے گفتگو کر رہے تھے۔ صوبائی وزیر خوراک قلندر خان لودھی ، سیکرٹری خوراک اور دیگرمتعلقہ حکام بھی ملاقات کے دوران موجودہ تھے، جبکہ وفد کے اراکین میں چیئرمین فلورملز ایسوسی ایشن خیبرپختونخوا محمد اقبال خان، ایسوسی ایشن کے گروپ لیڈر خیبرپختونخوا محمد نعیم بٹ ، سینئرممبرز حاجی مسرت شاہ، عابد خان، سابق چیئرمین محمد عارف اور دیگر شامل تھے۔ وفد نے مسائل کے ازالے کے لئے خصوصی دلچسپی لینے پر وزیراعلیٰ اور صوبائی وزیر کا شکریہ ادا کیا، اور کہا کہ صوبائی حکومت کے ہنگامی اقدامات کی وجہ سے مسائل کافی حد تک حل ہوئے ہیں ، اور فلورملزمالکان کو ریلیف ملا ہے ، وفد نے پنجاب سے صوبے کے لئے لی جانے والی گندم کا کوٹہ مزید بڑھانے کی درخواست کی ، اور ضم شدہ اضلاع کے لئے بھی کوٹہ مختص کرنے کی تجویز پیش کی ۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبائی حکومت صوبے کی ضروریات اور فلور ملز ایسوسی ایشن کے مسائل سے بخوبی واقف ہے ۔ گندم کے بحران پر قابو پالیا گیا ہے ، اور آئندہ بھی جس حد تک ممکن ہوا ، ایسو سی ایشن کے حقیقت پسندانہ مسائل کا حل ضرور نکالیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ضم شدہ قبائلی اضلاع کے لئے بھی سبسڈی دینے جارہے ہیں جس کی سمری تیار ہے ۔ محمود خان نے کہا کہ گندم کو صوبے سے باہر لے جانے پر پابندی عائد کی گئی ہے ، تاکہ اپنی ضروریات ترجیح بنیادوں پر پوری کی جاسکیں۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہم سب اس صوبے سے تعلق رکھتے ہےںاس لئے ہمارے مسائل بھی مشترک ہےں ۔ ہم نے مل کر درپیش مسائل کا سامنا کرنا ہے اور عوام کو ریلیف دینا ہے ۔