خیبرپختونخوا کے وزیر بلدیات، الیکشنز و دیہی ترقی شہرام خان ترکئی نے کہا ہے کہ عصری تقاضوں کے مطابق جدید تعلیم کے ساتھ دینی تعلیم کا حصول بھی لازمی ہے۔ قرآنی تعلیمات پر مبنی نصاب ِتعلیم کے لیے پائلٹ سکول قائم کیا جائے گا جس میں جدید تعلیم کے ساتھ ساتھ قرآنی تعلیمات پر مبنی نصاب بھی پڑھایا جائے گا جو کہ طالب علموں کی کردار سازی میں اہم کردار ادا کرے گا۔ صوبائی وزیر نے ان خیالات کا اظہار صوابی میں جدید و دینی تعلیم سے آراستہ پائلٹ سکول کی تعمیر کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں وزیراعلی خیبرپختونخوا کے مشیربرائے تعلیم ضیاء اللہ خان بنگش نے بھی شرکت کی جبکہ اس موقع پر سیکرٹری تعلیم ارشد خان، ڈائریکٹر جنرل ثانوی و پرائمری تعلیم حافظ ابراہیم، نجی شعبہ کے ماہرین تعلیم و دیگر حکام نے بھی شرکت کی۔ نجی شعبہ سے تعلق رکھنے والے دینی و جدید تعلیمی اداروں کے ماہرین نے اپنے طرز تعلیم اور نصاب کے حوالے سے اجلاس کے شرکاء کو بریفنگ دی۔ اس موقع پر مشیر تعلیم ضیاء اللہ بنگش نے کہا کہ نجی شعبہ کی تحقیق اور نظامِ تعلیم میں جدت پسندی سے استفادہ حاصل کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے صوبے کے سکولوں میں جدید نصاب تعلیم پر کام شروع کر رکھا ہے۔ اس موقع پر وزیر بلدیات شہرام خان ترکئی نے کہا کہ عصری تقاضوں کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے ہمیں ایسا سکولنگ سسٹم بنانا ہوگا جس میں جدید تعلیم کے ساتھ قرآنی تعلیمات صحیح معنوں میں مہیا کی جاتی ہوں تاکہ نئی نسل دنیا کے ساتھ ساتھ دین سے بھی روشناس ہو سکے۔ انہوں نے متعلقہ حکام کو ایسے ایک پائلٹ سکول کی تعمیر اور نصاب تعلیم تیار کرنے کی ہدایت کی جہاں جدید تعلیم کے ساتھ ساتھ قرآنی تعلیمات دی جاتی ہوں۔