خیبر پختون خوا کے سینئر وزیر برائے سیاحت وثقافت عاطف خان کے ساتھ گزشتہ روز سویڈن کی سفیر جوہانسن نے انکے دفتر میں ملاقات کی ملاقات میں سیاحت کے فروغ،اقتصادی ترقی،مذہبی سیاحت سمیت دیگر اہم امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر سویڈش سفیر نے صوبے میں سیاحت کے شعبے میں سرمایہ کاری میں گہری دلچسپی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ خیبر پختون خوا صوبہ سیاحت کے لحاظ سے انتہائی اہم ہے جہاں پر سیاحت کے بے پناہ مواقع موجود ہیں۔ سیاحت کو ترقی دیکر صوبہ اور پاکستان ترقی یافتہ ممالک کے فہرست میں اپنا جگہ سکتا ہے۔سیاحت ہی وہ شعبہ ہے جس کے زریعے صوبے کا بہتر امیج دنیا پر عیاں کیا جا سکتا ہے۔خیبر پختون خوا میں مذہبی سیاحت کے بھی کافی مواقع موجود ہیں مذہبی سیاحت کو ترقی دیکر معیشت کو مضبوط بنانے سمیت مذہبی ہم آہنگی کو بھی فروغ دیا جاسکتا ہے۔سفیر کا مزید کہنا تھا کہ میں نے خود صوبے میں موجود بدھ مت کے مقدس مقامات کا دورہ کیا ہے یورپین ممالک میں بڑی تعداد میں بدھ مت کے اہلکار موجود ہیں جو یہاں پر موجود بدھ مت کے مقدس مقامات دیکھنا چاہتا ہے۔ سینئر وزیر سیاحت عاطف خان نے سویڈش سفیر کو سیاحت کے فروغ کے لئے شروع کئے گئے اقدامات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان سیاحتی ترقی میں گہری دلچسپی لے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ غیر ملکی سیاحوں کے لئے ان لائن ویزہ کی سہولت فراہم کرنے کے علاوہ این او سی کے شرائط بھی ختم کردئے گئے ہیں۔حکومت سیاحتی شعبے کو ایک برینڈ کے طور پر متعارف کرنے کے لئے اقدامات کررہی ہے اور اس سلسلے میں ٹورازم اتھارٹی کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔سینئر وزیر نے کہا کہ تمام سیاحتی مقامات تک بنیادی انفراسٹرکچر فراہم کرنے کے علاوہ صوبے میں ایکو ٹورازم بھی متعارف کی جارہی ہے۔