پشاور میں ہائیر سیکنڈری سکولوں کی سطح پر 20 سکواش کورٹس قائم کئے جائینگے جس کے لئے 25 کروڑ روپے کی خطیر رقم مختص کی گئی ہے۔ پشاور کے بعد صوبے کے دیگر اضلاع میں بھی سکواش کورٹس قائم کئے جائینگے۔یہ فیصلہ سینئر وزیر برائے کھیل و سیاحت عاطف خان کی زیرصدارت منعقدہ اجلاس میں ہوا۔اجلاس میں سیکرٹری کھیل کامران رحمان سمیت ڈائریکٹر جنرل سپورٹس اسفندیار خٹک اور دیگر حکام نے بھی شرکت کی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سینئر وزیر نے کہا کہ سکواش کورٹس قائم کرنے کا مقصد صوبے میں سکواش گیم کی بحالی اور فروغ ہے۔ہمارے صوبے نے سکواش کے نامور کھلاڑی پیدا کئے ہیں جنہوں نے بین القوامی سطح پر ملک کا نام روشن کیا ہے صوبے میں سکواش کی بے پناہ صلاحیت موجود ہیں جسے سامنے لایا جائیگا اور اس مقصد کے لئے پورے صوبے میں اضلاع کی سطح پر سکواش کورٹس قائم کئے جائینگے۔ سینئر وزیر نے محکمہ کھیل کے حکام کو ہدایت کی کہ سکواش گیم کی بحالی میں سکواش کے ماہرین کی خدمات لی جائیں۔اس موقع پر سینئر وزیر کو سیاحت،ارکیالوجی،یوتھ افئیرز اور محکمہ ثقافت کی جاری اور نئے سکیموں کے بارے میں بھی بریفنگ دی گئی۔سینئر وزیر نے تمام جاری اور نئے منصوبوں پر کام تیز کرنے کی ہدایت کی۔